1. Skip to Menu
  2. Skip to Content
  3. Skip to Footer>

PDF Print E-mail

User Rating: / 0
PoorBest 

بسم الله الرحمن الرحیم

Salfi kon? Hanfi ya Ghair Muqallid ?

سلفی کون؟ حنفی یا غیرمقلد؟

قال النبی صلی الله علیه وآله وسلم البرکة مع اکابرکم : جامع صغیر

الحمد لله الذی هو متفرد فی ذاته و منزۃ فی صفاته و متوحد فی افعاله ولا شریک له والصلوۃ والسلام علی من لا نبی بعدہ وهو صادق ومصدوق فی اقواله و افعاله وعلی من تبعه من الصحابه و التابعین ومن بعد هم من ائمة المسلمین الذین سعوا فی ترویج الکتاب والسنة وبذلوا وسعهم فی اشاعة الدین من الفقهاء والمحدثین رضی الله عنهم ورحمة واسعة

کافی عرصے سے وطن عزیز میں غیر مقلدین حضرات تحریرآ تقریرآ یہ مشغلہ جاری رکھے ہوئے ہیں کہ مقلدین اور خصوصآ حنفی اہل سنت والجماعت میں داخل نہیں ہے اور یہ بلاشرکت غیرے اہلحدیث ہم ہی ہیں علماء ربانی نے بھی تقریروں اور تحریروں کے علاوہ مناظروں کی صورت میں اس فتنے کا سدباب کیا غضب یہ ہے کہ لوگ قرآن و حدیث کی من مانی تشریح کرتے ہوئے اور اپنی ذاتی تحقیق پر نازاں ہونے کے باوجود خود کو سلفی کہتے ہیں یعنی اسلاف کے پیروکار جبکہ یہ ہے کہ محض سعودی حکومت سے آشیر باد حاصل کرنے کی خاطر انہوں سلفی کا لقب اختیار کیا ہوا ہے اور حنفی ہی اصل میں سلفی ہیں غیر مقلدوں کی نسبت حنفیوں کو بھی یہ گمان ہونے لگا کہ جو خود کو سلفی کہلوائے وہ لازمآ غیر مقلد ہوگا اور اس وہم میں عوام الناس ہی نہیں بڑے بڑے علماء بھی مبتلا ہیں اور اس کی وجہ صرف اور صرف اسلاف کی کتب سے ناواقفی ہے جب کتب اسلاف سے تعلق کم ہوگا تو سلفی کے مفہوم سے آگاہی کیسے ہوسکتی ہے خود راقم الحروف کا ذاتی تجربہ ہےکہ جہاں کہیں اپنا تعارف کروایا تو احباب ترچھی نگاہوں سے گھورنے لگے کہ یہ غیر مقلد کہاں سے آگیا اور ایک دو مرتبہ نہیں بلکہ بارہا یہ واقعہ پیش آیا چناچہ باقاعدہ وضاحت کرنی پڑتی ہے کہ ہم حنفی سلفی ہیں جب آنت کی طرح یوں اپنا نام بڑھتے دیکھا تو جی میں آیا کہ مختصر کتابچے میں اس امر کی وضاحت کردی جائے کہ سلفی کون ہیں غیرمقلد یا حنفی کتابوں کے اندر ہمارے علمائے اہل سنت دیوبند نے اس پر کافی شافی بحث کی ہے اور ثابت کیا ہے کہ یہ محض پروپیگنڈا ہے اور غیر مقلدوں کو سلفی کہنا ( اور کہلوانا ) بالکل غلط ہے کہ وہ اسلاف کے پیروکار ہی نہیں ہم یہاں مسلک دیوبند کے ان چندایک علماء کے حوالے درج کررہے ہیں جن کو احناف کے اندر ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت حاصل ہے اس کتابچے کی تیاری میں ہم نے محق دوراں علامۃ العصر مولانا ڈاکٹر خالد محمود صاحب دامت برکاتہم العالیہ کی شہرہ آفاق علمی اور تحقیقی کتاب آثار التشریع جلد اول سے مدد لی ہے الله تعالی ہم سب کو حق سمجھنے کی توفیق نصیب فرمائے اور اپنے اسلاف کا سچا پیروکار بنائے آمین ثم آمین

سلفی کا مطلب اور امام اھل سنت کا ارشاد

‎ ‎سلفی کا مطلب ہے اپنے اکابر کےنقش قدم پر چلنے والا

فیروز اللغات ص 507 مطبوعہ دہلی میں ہے سلفی یعنی سلف سے منسوب سلف یہ خلف کی ضد ہے یعنی اگلے لوگ آباؤ اجداد اور القاموس الجدید میں ہے: سلف گذشتہ مقدم ص 426

شیخ الحدیث امام اہل سنت حضرت مولانا محمد سرفراز خان صاحب صفدر رحمه الله لکھتے ہیں اسی طرح لفظ سلفی سے بھی یہ دھوکا نہیں کھانا چاہئے کہ شاید یہ لفظ غیر مقلد کے مترادف ہے ہم نے باحوالہ یہ عرض کیا ہے کہ حافظ ابو عمرو رحمه الله ابن الصلاح رحمه الله شافعی تھے اور باوجود مقلد ہونے کے وہ سلفی تھے چناچہ علامہ ذہبی رحمه الله لکھتے ہیں

وکان ابن الصلاح سلفیا : تذکرہ جلد 4 ص 215

اس لئے غیر مقلدین حضرات کو لفظ سلفی سے غلط فہمی ہوئی ہو تو وہ بھی رفع ہوجانی چاہئے باقی اہلحدیث اصحاب الحدیث اصحاب الاثر المحدث الحافظ المجتہد اور السلفی وغیرہ کے الفاظ سے کسی کو غیر مقلد سمجھا بالکل غلط اور بے بنیاد ہے

بحوالہ طائفہ منصورہ ص 146 145 ازالشیخ مولانا محمد سرفراز خان صفدر رحمه الله

علماء دیوبند اصلی

سلفی ھیں رئیس المناظرین حضرت مولانا محمد امین صفدر اوکاڑوی رحمه الله کی یاد میں ماہنامہ الخیر ملتان نے ایک ضحیم نمبر شائع کیا تھا اس میں محقق اہل سنت حضرت مولانا منیر احمد صاحب استاذ الحدیث باب العلوم کہروڑپکا نے تقریبآ دو سو 200 صفحات پر مشتمل ایک مضمون لکھا اور انصاف یہ ہے کہ مولانا مدظلہ کا مضمون پوری کتاب کی جان ہے چناچہ حضرت مولانا اوکاڑوی رحمه الله کا ایک ارشاد نقل کرتے ہوئے لکھتے ہیں

ایک مرتبہ حضرت مفتی محمود رحمه الله صاحب سے میں نے سنا فرمارہے تھے کہ میں نے بندوق کے شکار کی حلت و حرمت پر تحقیق کی تو بہت سارے حلت کے دلائل میرے سامنے آگئے میں نے ان کو تحریری شکل میں جمع کرلیا لیکن ہمارے اکابر کی تحقیق یہ ہے کہ بندوق کا شکار حرام ہے اس لئے میں نے اپنے تحریر کردہ دلائل جلا ڈالے تاہم مسلسل غور کرتا رہا بعد میں حقیقت منکشف ہوئی تو پتہ کہ میں جن کو دلائل سمجھتا رہا وہ اصل میں دھوکہ تھے جو مزید غور و فکر کے ساتھ دور ہوگئے اس لئے اصلی سلفی تو ہم ہیں کہ ہماری تحقیق کی بنیاد اسلاف سے بدگمانی و بداعتمادی اور ذہنی آوارگی نہیں بلکہ اسلاف کے ساتھ موافقت اور نظریاتی وابستگی اور اعتماد علی السلف کی وجہ سے سلفی ہے اور جو اس معنی میں سلفی نہیں وہ دیوبندی بھی نہیں

مولانا اوکاڑوی رحمه الله نمبر ص 203 ماہنامہ الخیر ملتان بابت نومبر 2001ء

سلفی کی اصطلاح

مفکر اسلام علامہ ڈاکٹر خالد محمود صاحب مدظلہ رقمطراز ہیں:

تاریخ اسلام میں سلفی وہ لوگ ہیں جو ان مسائل میں جن میں قرآن و حدیث کی صریح راہنمائی نہ ملے سلف صالحین کی پیروی کریں اور ان کی دلیل کے درپے نہ ہوں ان حدود میں سلف کی بلادلیل پیروی سے ہی انسان سلفی بنتا ( کہلاتا ) ہے اور اسلاف کی بلادلیل پیروی کو ناجائز جاننے والا سلفی نہیں غیر مقلد کہلائے گا اس پہلو سے سلفی اور غیر مقلد دو 2 متوازن اصطلاحیں ہیں نہ کسی پہلے دور میں سلفی غیر مقلدین تھے اور نہ اب انہیں سلفی کہا جاسکتا ہے یہ غیر مقلد علماء کا سعودی عرب کے مقلد علماء سے آشیرباد حاصل کرنے کا ایک لفظی فریب ہے جس پر پردہ ڈالا گیا ہے سو ضروری ہے کہ یہاں کے عام مسلمان سعودی حکومت اور ان کے علماء کو یہاں ( پاک و ہند ) کے اہل حدیث باصطلاح جدید کہلوانے والے گروہ کے آئینے میں نہ دیکھیں سعودی عرب کے علماء مع شیخ محمد بن عبدالوھاب مقلدین میں سے ہیں اور وہ چاروں اماموں میں سے کسی کی تقلید پر انکار نہیں کرتے نہ اسے حرام اور شرک سمجھتے ہیں نہ اس کی مخالفت کرتے ہیں :آثار التشریع جلد اول صفحہ 477

حقیقت یہ ہے کہ ان لوگوں کو یہ پتہ ہی نہیں کہ سلفی کسے کہتے ہیں اور اس حقیقت کا بھی انکار نہیں کیا جاسکتا کہ غیر مقلدین کو تاریخ میں کبھی سلفی نہیں کہا گیا نہ یہ سلف کے دور میں کبھی تھے یہ لوگ ابھی ابھی سلفی کہلوانے لگے ہیں پھر درایتہ بھی‎ ‎ان لوگوں کی بیان کردہ سلفی تشریح لائق قبول نہیں کہ یہ قرآن و سنت کو سلف صالحین کی طرح ماننے والوں کا نام ہے یہ اس لئے کہ سلف صالحین بھی کسی ایک طریقہ پر نہ تھے سلف صالحین میں وہ تمام اختلافات ہی تھے جو آئمہ اربعہ کے ہاں واقع ہوئے یہ صحابہ کرام رضی الله عنهم کے فقہی اختلافات ہی تھے جو بعد میں آئمہ کے ہاں مدون ( کتابی شکل میں لکھ کر جمع کیا گیا ) اور منضبط ( عمل درآمد ) ہوبنا شروع ہوئے ائمہ کرام رحمه الله نے اختلاف پیدا نہیں کئے انہوں نے اختلافات کو اوپر سے لیا ہے ائمہ نے ان ہی کو مرتب اور منضبط کیا ہے ان کوششوں سے بیسوں اختلافات سمٹ کر چار میں محدود ہوکر رہ گئے اب جو شخص ان اختلافات کی بناء پر مسلک اربعہ کو افتراق و انتشار کا مؤجب بتلاتا ہے اور انہیں طعن و تشنیع کا نشانہ بناتا ہے وہ یہ نہیں سوچتا کہ یہ اختلافات تو صحابہ کرام رضی الله عنهم کے درمیان بھی پائے جاتے تھے اب آپ خود ہی فیصلہ کریں کہ امت میں افتراق و انتشار کا سبب صحابہ کرام رضی الله عنهم کو قرار دینا شیعہ کے سوا کس کا کام ہوسکتا ہے اصحاب رسول صلی الله علیه وسلم کے خلاف شیعوں کی بے حساب کتب ہیں . صرف 25 پچیس کتب غلام حسین نجفی آنجہانی کی راقم کے پاس موجود ہیں اور اس میں خرافات ہیں اس سے الله کی پناہ  آمین کیا اس طرح غیر مقلدین چھوٹے شیعہ نہیں اس عہد ( دور ) کے غیر مقلدین کو سلفی کہنا سلف کی اس تاریخ سے ایک کھلا مذاق ہے شیخ عبدالرؤف مناوی رحمه الله لکھتے ہیں

سلف صحابہ کرام رضی الله عنهم اور تابعین کرام اور تبع تابعین کرام علیهم عظام رحمه الله ان سب سے راضی ہوا ان کے مذاہب بہت تھے انہیں گنا نہیں جاسکتا اور ایسے اجتہادات ہیں جو اجتہادی شرطوں کو پورا کرتے ہیں ان کو الله تعالی کی طرف سے مدد ملی اور کسی کو ان میں سے کسی پر طعن کرنے کا حق نہیں ہے خلاصۃ التحقیق اب آپ ہی سوچیں ان میں سے کس کے طریقے کو سلفی کہا جائے اور کس کو غیر سلفی حق یہ ہے کہ یہ سب اسلاف تھے اور ان میں سے ہر ایک کا مذہب سلفی طریق شمار ہوگا

مشرق وسطی میں سلفی کا تعارف

ہندوستان میں غیرمقلدوں کی ترک تقلید کی صدا کسی حد تک سن لی گئی لیکن عرب ممالک میں ان کا اس پہلو سے تعارف خاصا مشکل مرحلہ تھا وہ قوم ہی کیا جو اپنے سے پہلوں کی راہ پر نہ ہو عرب دنیا مقلدین سے بھری تھی سعودی عرب میں بھی علماء آل شیخ حنبلی تھے ان غیر مقلدین کو بطور غیر مقلد پاؤں دھرنے کی جگہ نہ مل سکتی تھی چناچہ انہوں نے سلفی کا عنوان اختیار کیا سلفی سے مراد سلف کی مطلقآ تقلید کرنے والے سمجھے گئے چناچہ اس نام کا سہارا لے کر انہوں (غیرمقلدوں ) نے وہاں قدم جمادیئے اس کے بعد انہوں ( غیرمقلدوں ) نے سلفی کو اتنا عام کیا کہ اپنے ناموں کے علاوہ اداروں کے نام سے منسوب کردیئے خود غیرمقلد علماء کا ضمیر بھی کہتا ہوگا کہ ہم جھوٹ بول رہے ہیں ہمیں اسلاف سے ذرا بھی نسبت نہیں لیکن حنفیوں کو بھی تو بدنام کرنا ہے

جرمنی کا مشہور پروپیگنڈسٹ جس کا نام گوئمبلز تھا اس نے جھوٹ کی نشرو اشاعت کے اصول مدون کئے اور سب سے اہم اصول اس کا یہ ہے کہ جب کسی کو بدنام کرنا ہو تو تابڑ توڑ اس پر غلط الزامات لگاؤ اس جھوٹ کو خوب پھیلاؤ مسلسل پھیلاؤ اور اس قدر جھوٹ بولو کہ خود تمہیں اپنا جھوٹ سچا معلوم ہونے لگے آج یہ عجمی گوئمبلز اسی قانون پر عمل پیرا ہیں اور اس قدر پروپیگنڈہ ہوا کہ اکثر حنفی نوجوان علماء جن کو خارجی کتب بینی کیلئے فرصت نہیں اور اکابر کی کتب سے ناواقف ہیں وہ بھی اس کی رو میں بہہ گئے اور یہ سمجھنے لگے کہ واقع سلفی غیرمقلد ہوتے ہیں مشہور اہلحدیث عالم مولانا وحید الزماں صاحب نے اس تحقیق کا اعتراف کر ہی لیا کہ اہلحدیث سلف کی پرواہ نہیں کرتے تو پھر وہ سلفی کیسے مولانا وحید الزماں لکھتے ہیں

غیر مقلدوں کا گروہ جو اپنے تیئں اہلحدیث کہتے ہیں انہوں نے ایسی آزادی اختیار کی ہے کہ مسائل اجماعی کی پرواہ نہیں کرتے نہ سلف صالحین اور نہ صحابہ کرام رضی الله عنهم اجمعین اور تابعین کرام علیهم عظام کی قرآن کی تفسیر صرف لغت سے اپنی من مانی کرلیتے ہیں حدیث شریف میں جو تفسیر آچکی اس کو بھی نہیں مانتے

لغات الحدیث مادہ شعب

قارئین کرام:

جس انصاف پسند انسان کو ذرا برابر بھی علم سے اگر لگاؤ ہے تو وہ بخوبی جانتا ہے کہ اسلاف کی اتباع سو فیصد احناف نے کی ہے پھر حنفیوں میں علمائے دیوبند تو اسلاف کے جامد اور مردہ مقلد ہیں بلکہ دیوبندیت میں سے اگر کسی نے اسلاف کی تحقیق پر عدم اعتماد کیا تو ہمارے اکابر نے تو ان کا بھی تعاقب کیا ہمارے علماء کی تفسیری حدیثی تبلیغی جہادی اور تدریسی خدمات اظہر من الشمس ہیں جو پکار پکار کر کہہ رہی ہیں کہ ہم ہی اسلاف کے متبع ہیں اور اسلاف سے ہٹ کر سرمو بھی ادھر ادھر جانا گوارا نہیں کرتے تو بتلایئے سلفی کون ہیں حنفی یا غیرمقلد شیعت خارجیت اور غیرمقلدیت یہ سب عدم اعتماد علی السلف کے مریض ہیں

پنج پیری مماتی بھی سلفی نھیں ھیں

عیاری اور مکاری کے اس دور میں تحقیق کی مارکیٹ کے اندر دو نمبر کا ایسا مال بھی موجود ہے جس کے اوپر دیوبندیت کا اسٹکر چسپاں ہے ان گلابی دیوبندیوں کی ہٹ دھرمی دیکھیئے کہ مسئلے وہ ایجاد کرتے ہیں اور دعوی یہ کہ ہم دیوبندی ہیں ارے احمقوں دیوبندیت کس چیز کا نام ہے کون نہیں جانتا کہ سرور دوعالم صلی الله علیه وسلم اور دیگر انبیاء کرام علیهم الصلوۃ والسلام کے متعلق علماء دیوبند کا عقیدہ ہے کہ وہ بعد از وفات اپنی قبور میں زندہ ہیں اور دیوبندیت کے دعویدار حیات فی القبر کے منکر ہیں اکابر علمائے دیوبند اپنے سے پہلے فقہاء احناف کی اتباع میں سلفی تھے اور اب علماء دیوبند کی تحقیق کو آنکھیں بند کرکےقبول کرنے والا سلفی ہے

علماء دیوبند اصحاب محمد صلی الله علیه وسلم کی طرح آل محمد صلی الله علیه وسلم کے بھی غلام ہیں اور اسلاف کا مسلک یہ ہے کہ حضرت حسین رضی الله عنه کے مقابلے میں یزید کی کوئی اہمیت نہیں ہے علماء دیوبند اگرچہ یزید کو کافر نہیں کہتے مگر فاسق ضرور کہتے ہیں اور یہ مماتی حضرات تو یزید کی بلا اجرت وکالت کرتے ہیں اس کی مدح سرائی میں ان کی زبان اور قلم وقف ہے حجۃ الاسلام حضرت مولانا محمد قاسم نانوتوی رحمه الله نے اجوبۂ اربعین کے صفحہ 185 پر یزید پلید لکھا ہے  قطب الارشاد حضرت مولانا رشید احمد گنگوہی صاحب رحمه الله نے بھی اپنی معروف کتاب هدیۃ الشیعہ صفحہ 95 پر یزید کو پلید لکھا ہے حکیم الامت حضرت مولانا محمد اشرف علی صاحب تھانوی رحمه الله نے بہشتی زیور حصہ 8 پر یزید کو کمبخت لکھا ہے امیر شریعت مجاہد کبیر حضرت مولانا سید عطاء اللہ شاہ صاحب بخاری رحمه الله نے لاہور ہائیکورٹ میں بیان دیا تھا کہ کوئی مسلمان اپنے آپ کو یزید نہیں کہہ سکتا مقدمات امیر شریعت اور شاہ جی نے حضرت خواجہ غلام فرید رحمه الله کی مدح میں ایک شعر کہا تو جو فارسی میں ہے

ہر کہ بدگفت خواجہ مارا

ہست او بے گمان یزید پلید

جو کوئی ہمارے خواجہ کو برا بھلا کہے وہ بے گمان یزید پلید ہے

بحوالہ خارجی فتنہ جلد نمبر 2 ص 603 نیز شاہ جی کے علمی و تقریری جواہر پارے ص 148 پر بھی مذکورہ بالا شعر موجود ہے غرضیکہ یزید کا فاسق ہونا اہل سنت والجماعت کے مسلک میں متفق علیہ ہے مگر مماتی دوستوں میں حضرت مولانا عطاء اللہ بندیالوی صاحب نے واقعہ کربلا اور اس کا پس منظر نامی کتاب لکھی ہے اس میں یزید کے وہ گن گائے گئے ہیں کہ جو ابن زیاد بھی شاید نہ گاسکا ہوگا لیکن پھر بھی ان کی فولادی دیوبندیت میں کچھ فرق نہ آیا اور اس کتاب پر حضرت مولانا قاضی محمد یونس انور صاحب خطیب مسجد شہداء اور مولانا محمد حسین نیلوی صاحب کی تصدیقات موجود ہیں بندیالوی صاحب فرماتے ہیں ہم جانتے ہیں کہ کچھ نیک دل علماء نے اپنی تحریروں میں یزید کی طرف فسق کی جو نسبت کی ہے تو اس کی وجہ یہ تھی کہ تاریخ کی مستند اور صحیح کتب ان تک نہ پہنچ سکیں اور مدت کے شیعی پروپیگنڈے نے اپنا کام کر دکھایا یا ان علماء نے تحقیق و جستجو کی ضرورت محسوس نہیں کی واقعہ کربلا اور اس لا پس منظر صفحہ 22 21

ایک اور مقام پر یوں گل کھلاتے ہیں

آج ہر دور کا ملاں پیشہ ور واعظ مببر و محراب کیلئے بدنما داغ خطیب سنی نما شیعہ قاضی و نعمانی کئی لال کالے شاہ اپنی تقریر و تحریر میں یزید کو کافر کبھی فاسق و فاجر اور شراب نوش کہہ کر لعنت کی تسبیح پڑھنا کار ثواب سمجھتے ہیں الخ ص 27

اور یہ نیلوی شاہ صاحب جن کی کتاب مظلوم کربلا بذات خود ایک انتہائی متنازعہ کتاب بنی ہوئی ہے اس کے صفحہ 100 پر نیلوی صاحب نے لکھا ہے حضرت امام حسین رضی الله عنه سے تو جنرل ضیاء الحق ہی اچھا رہا کہ جب بھی اسے کوئی مہم پیش آتی تو سیدھا مکہ شریف جاپہنچتا الله تعالی سے رو رو کر دعائیں کرتا

مظلوم کربلا صفحہ 100 ناشر گلستان پرنٹنگ پریس سرگودھا

اب ان ڈرامہ بازوں سے کوئی پوچھے کہ کیا نواسہ رسول صلی الله علیه وسلم شہزادہ جنت کے مقابلہ میں یزید کی مخالفت کرنا اور اس کی حمایت میں زمین و آسمان کے قلابے ملانا کیا یہی تمہارے نزدیک دین کی خدمت رہ گئی ہے تحفظ ختم نبوت صلی الله علیه وسلم اور ناموس صحابہ رضی الله عنهم کیلئے تم نے کتنی قربانیاں دی ہیں رد شیعیت پر تم نے کونسا تحقیقی کام کیا اور ہاں بندیالوی صاحب نے سپاہ صحابہ رضی الله عنهم کے مقابلہ دفاع صحابہ رضی الله عنهم بناکر امیر عزیمت بننے کی کوشش کی تھی مگر سابق کمشنر سرگودھا ڈویژن تجمل عباس جن کو قتل کردیا گیا تھا کے سامنے عزیمت دم توڑگئی اور جماعت بھی ختم کردی گئی اب تمام ترتوانائیاں یزید کو سچا ثابت کرنے پر صرف ہورہی ہیں کاش کوئی حسینی پیدا ہو جو ان وقت کے یزیدوں کا گریبان پکڑے اگر یہ لوگ خود کو دیوبندی نہ کہلواتے تو شاید ہم بھی برہم نہ ہوتے مگر حد ہوگئی کہ برملا کہا جارہا ہے کہ اکابر کو کتب تاریخ میسر نہ آسکیں ان کو تحقیق کی فرصت ہی نہیں ملی حیات النبی صلی الله علیه وسلم کا مسئلہ ہو تو تب بھی کہا جاتا ہے کہ اکابر کے قدم ڈگمگاگئے فسق یزید کا مسئلہ ہو تو تب اکابر تحقیق نہ کرسکے پھر اکابر ساری زندگی کیا کرتے رہے  تحقیقی کام تو ان لونڈوں نے شروع کیا ہے یزید کی حمایت کرنے والے جان لیں کہ تم طبع آزمائی خوب کرلو امت محمدیہ صلی الله علیه وسلم کے قلب و جگر سے وہ عشق حسین رضی الله عنه جو اسلاف نے اور اکابر علمائے‎ ‎دیوبند نے پیدا کیا کبھی نہیں نکل سکتا

نہ یزید  کا   وہ   ستم  رہا نہ  زیاد  کی   وہ  جفا   رہی

جو رہا تو نام حسین رضی الله عنه کا جسے زندہ رکھتی ہے کربلا

جو لوک شہادت حسین رضی الله عنه میں ملوث تھے مثل ابن زیاد اور‎ ‎شمرذالجوشسن کے الله تعالی نے ان کو دنیا کے اندر ہی تباہ کردیا اور ابن زیاد کو تو اس کی ماں نے بددعا دی چناچہ حافظ ابن کثیر رحمه الله نے لکھا ہے

قالت مرجانة لابنها عبید الله یا خبیث قتلت ابن بنت رسول الله صلی الله علیه وسلم لاتری الجنة ابدا

البدایہ والنہایہ جلد نمبر 8 صفحہ 286

ترجمہ: مرجانہ نے اپنے بیٹے عبیدالله بن زیاد سے کہا کہ اے خبیث تو نے رسول الله صلی الله علیه وسلم کے نواسے کو قتل کیا ہے تو کبھی جنت نہیں دیکھے

ہمیں خطرہ ہے کہ آج امام حسین رضی الله عنه کی گستاخی کرنے والے بھی کہیں عبرتناک سزا کے مستحق نہ بن جائیں

نہ جا اس کے تحمل پر کہ ہے بے ڈھب گرفت اس کی

ڈر اس کی سخت گیری سے کہ ہے سخت انتقام اس کا

قارئین کرام

ہمارا یہاں موضوع حامیان یزید نہیں جملہ معترضہ کے طور پر ہم نے اشارہ کیا ہے کہ یہ لوگ بھی سلفی کے مفہوم میں داخل نہیں کیونکہ بقول ان کے اسلاف نے تو کبھی کتابیں دیکھی ہی نہ تھیں اگر حضرات علماء دیوبند اور اسلاف کے متعلق اتنی بدگمانی رکھنے کے بعد یہ لوگ سنی دیوبندی ہونے کے مدعی [ دعویدار ] ہیں تو یہ ان کی بہت بڑی زیادتی ہوگی

سلف صالحین پر عدم اعتماد بہت بڑی بدبختی ہے بقول مولانا رومی رحمه الله کے

چوں خدا خواهد که پردہ کس درد

ملیش اندر طعنه پاکاں نهد

جب الله تعالی کسی کا پردہ چاک کرنا چاہتا ہے تو اس کی تحریر و تقریر میں سلف صالحین اور پاکیزہ شخصیات پر الزام تراشی اور طعنہ ذنی آجاتی ہے

اور آج کل کے بے علم و بے عمل انسانوں کا اسلاف پر طنز کرنا در حقیقت ان کے کامل ہونے کی علامت ہے متنبی نے کیا خوب کہا تھا

فاذا اتتک مذمة من ناقص

فهی الشهادة لی بانی کامل

ترجمہ: جب تجھ تک کسی ناقص اور گھٹیا انسان کی طرف سے میری برائی پہنچے تو یہ اس بات کی شہادت ہے کہ میں کامل ہوں

ہر مسلمان سے استدعا ہے کہ ہر قسم کی رطب و یابس سے بھرپور کتب کا مطالعہ کرنے سے قبل علمائے دین سے رجوع کرلیا کرے تاکہ موجودہ دور کے فتنوں سے محفوظ رہ سکیں فی زمانہ گمراہی سے بچنے کا سب سے بڑا حل یہ ہے کہ اپنے اسلاف کے نقش قدم پر چل کر حقیقی معنوں میں سلفی بن جائیں اور اکابرین سے امت کو دور کرکے نام نہاد سلفیوں میں سے ایک خیرخواہ کو سمجھنے کی کوشش کریں جوں جوں بے خبری کے بادل چھٹتے جائیں گے صبح اتحاد اور سلامتی ایمان کا چہرہ نکھرتا جائے گا

نہیں اقبال ناامید اپنی کشت ویراں سے

ذرا نم ہو تو یہ مٹی بڑی زرخیز ہے ساقی

خادم علمائے حق دیوبند

 

حافظ محمد عبدالجبار سلفی حنفی [ دیوبندی]

 

 

Other Menu

Latest Articles

Who's Online

We have 137 guests online

Statistics

Members : 6
Content : 1066
Content View Hits : 4386949

Get Latest Feed

Enter you email address to get in touch with latest updates

یہاں اپنا ای میل ایڈریس رجسٹر کروائیں اور ویب سائٹ کی تازہ اپ ڈیٹس سے باخبر رہیں

Most Read Articles

  1. مولانا اسماعیل محمدی
  2. فضائل اعمال
  3. مولانا محمد امین صفدر اوکاڑوی
  4. نفس کے پجاری - غیر مقلدین
  5. جنت البقیع میں مدفون علمائے دیوبند
  6. طاہر القادری رنگے ہاتھوں پکڑا گیا۔!! ضرور دیکھیں
  7. انٹرنیٹ کی کارستانیاں (ایک بدنصیب لڑکی کی داستان
  8. شیعہ مذہب کی ابتداء ۔۔۔ اور ان کا فرقوں میں بٹنا
  9. انگریز کا الاٹ کردہ لقب اہلحدیث واپس کرتے ہیں
  10. مولانا حق نواز جھنگوی ۔ آڈیو بیانات
  11. فتنہ ڈاکٹر ذاکر نائیک
  12. Mufti Manzoor Mengal
  13. مناظرہ کوہاٹ کی ویڈیوز
  14. مولانا ضیا ء الرحمن فاروقی ۔ آڈیو بیانات
  15. جوشخص شیعہ کے کفر میں توقف کرے تو وہ بھی ان جیسا کافر ہے۔
  16. ترک رفع الیدین والی حدیث کو کن کن محدثین نے صحیح قرار
  17. Shaikh Saad Al Ghamedi
  18. مناظرہ ترک رفع الیدین - محمد امین اوکاڑوی
  19. Ameer Shariat Syed Attaullah Shah Bukhari
  20. مصنف ابن ابی شیبہ کی ناف کےنیچےہاتھ باندھنےوالی روایت کی تحقیق
  21. شیعوں کا عقیدہ ان کی کتابوں سے
  22. تاریخی حولات جات۔ شیعہ کافر
  23. بیکاٹ فیس بک
  24. خاتم الانبیاء کا طریقہ نماز
  25. درس حدیث دارالعلوم دیوبند
  26. Maulana Ilyas Ghuman - Audio bayanat
  27. غیر مقلدین کے سوالوں کے جوابات
  28. بریلویت قصور۔ مولانا الیاس گھمن
  29. ام المومنین سیدہ عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا
  30. اهل حدیث کے چهہ نمبر
  31. ALLAH EXISTS WITHOUT A PLACE
  32. سلفی کون؟ حنفی یا غیرمقلد؟
  33. سنی مسلمان شیعہ کی تکفیر کیوں کرتے ہیں؟
  34. میں کیوں حنفی ہوا؟
  35. The Blindest Following

Share you Idea

تمام حضرات سے گذارش ہے کہ سائیٹ کو ایکسپلور کرتے ہوئے اگر آپ کو کوئی خرابی نظر آئے یا اپ سائیٹ کی بہتری کیلئے کوئی مشورہ دینا چاہیں تو کنٹیکٹ اس کے پیج پر جا کر ہمیں ضرور مطلع فرمائیں

 

Ownislam:

This Website is dedicated to our beloved Prophet Muhammad (PBUH). In this website you will get the correct information regarding Islam in the light Holy Quran and the Authentic Hadith. It's time to understand and practice Islam properly so that we can spread the message and teachings of deen. Our zeal is to bring people back to real Jama'at of our Nabi Muhammad PBUH and Sahabas R.A.

We Would Like You To

Join .... Invite ... Share